بند کریں
شاعری قائم نقویدفیں بجیں تو باقی کوئی ڈر نہیں دیکھا

(71) ووٹ وصول ہوئے