بند کریں
شاعری قمرجلالوی

مریضِ محبت انہی کا فسانہ سناتا رہا دم نکلتے نکلتے

-

mareez e muhabbat inhi ka fasana sunata raha


(239) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان