بند کریں
شاعری قمر رضا شہزاد

کبھی ہماری کبھی اس کی سمت جاتے تھے

-

kabhi hamari kabhi uss ki simat jate the


(277) ووٹ وصول ہوئے