بند کریں
شاعری قمر ساجد

روح تک پھیل گیا دہر کا ویرانہ لگے

-

rooh tak phail giya duhar ka verana lagey


(255) ووٹ وصول ہوئے