بند کریں
شاعری قمر ساجد

یہ گردش محو جاں سے اک سہولت مانگتی ہے

-

yeh gardish e mehve jaan se ik saholat mangti hai


(285) ووٹ وصول ہوئے