بند کریں
شاعری قمر ساجد

ظلمت کو پردھان بنا کر دیکھ لیا

-

zulmaat ko pardhaan bana kar dekh liya


(251) ووٹ وصول ہوئے