بند کریں
شاعری قتیل شفائی

انگڑائی پر انگڑائی لیتی ہے رات جدائی کی

-

angraaye par angraayi leti hai , raat judayi ki


(262) ووٹ وصول ہوئے