بند کریں
شاعری قتیل شفائی

جب تصور مرا چپکے سے تجھے چھو آئے

-

jab tasswwer mera chupkay se tujhe chho aaye


(388) ووٹ وصول ہوئے