بند کریں
شاعری قتیل شفائیوہ دل ہی کیا ترے ملنے کی جو دعا نہ کرے

(679) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان