بند کریں
شاعری رساچغتائی

سر اٹھایا تو سر رہے گا کیا

-

sar uthaya tu sar rahe ga kiya


(451) ووٹ وصول ہوئے