بند کریں
شاعری ریحانہ قمرکوئی تہمت لگائے تو اذیت کم نہیں ہوتی

ریحانہ قمر

rehana qamar

(319) ووٹ وصول ہوئے