بند کریں
شاعری رحمان بابا

دہر میں مت کر کسی کے ساتھ بھی جور و جفا

-

deher main maat kar kissi k sath bhi joru jaf


(269) ووٹ وصول ہوئے