بند کریں
شاعری رحمان حفیظ

بس کوئی دیر ہے پھر خیر کا در کھلتا ہے

-

bass koi deer hai phir khair ka daar khulta hai


(278) ووٹ وصول ہوئے