بند کریں
شاعری رحمان حفیظوہ لہر جاگ نہیں پائی پھر وجود میں کیوں

(319) ووٹ وصول ہوئے