بند کریں
شاعری رضوان بابردرد کی لہر جو اُٹھی ہے ابھی

(10) ووٹ وصول ہوئے