بند کریں
شاعری رضوان بابراک بے حس کو حال سنایا کرتا تھا

(1) ووٹ وصول ہوئے