بند کریں
شاعری رخسانہ نور

چبھن نہیں ہے مگر اضطراب کافی ہے

-

chobhan nahin hai magar aztarab kafi hai


(227) ووٹ وصول ہوئے