بند کریں
شاعری سچل سرمستپہلے توڑ دے سب

(317) ووٹ وصول ہوئے