بند کریں
شاعری سعید خانکسی بھی سنگِ ملامت سے جی نہیں بھرتا

(293) ووٹ وصول ہوئے