بند کریں
شاعری سعید خان

سپردگی کا قرینہ سبھی کو آتا ہے

-

sapurdagi ka qareena sabhi ko aata hai


(276) ووٹ وصول ہوئے