بند کریں
شاعری سعید شارق

مَیں جی رہا ہوں کہ ماتم بھی ہو چکا میرا؟

-

main ji raha hon keh matam bhi ho chuka mera


(37) ووٹ وصول ہوئے