بند کریں
شاعری ساغر صدیقی

بات پھولوں کی سنا کرتے تھے

-

baat phooloon ki suna kartay thay


(170) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان