بند کریں
شاعری ساغر صدیقی

بھولی ہوئی صدا ہوں مجھے یاد کیجئے

-

bhooli howi sada hoon , mujhe yaad ki jiye


(411) ووٹ وصول ہوئے