بند کریں
شاعری سیف الدین سیفسفینہ رواں ہے

(397) ووٹ وصول ہوئے