بند کریں
شاعری سلیم طاہرگنبد نما مکان تھے روزن تھے در نہ تھے

(291) ووٹ وصول ہوئے