بند کریں
شاعری ثنا ء اللہ ظہیر

جو مہرباں ہے ستم گر بھی رہ چکا ہے کبھی

-

ju meherbaan hai sitaam gar bhi reh chuka hai kabhi


(180) ووٹ وصول ہوئے