بند کریں
شاعری ثنا ء اللہ ظہیرنہ کسی در سے لپٹتا نہ چمٹ جاتا ہوں

(164) ووٹ وصول ہوئے