بند کریں
شاعری سعود عثمانیغم شکوہ حال تک نہ آیا

(241) ووٹ وصول ہوئے