بند کریں
شاعری شاہد اسلم

پھر کیسے اُن کو کوئی کنارہ سفر میں ہو

-

phir kaise un ko kinara safar mian hoo

شاہد اسلم

shahid aslam

(392) ووٹ وصول ہوئے