بند کریں
شاعری شاہدزکی

کیا کہوں کیسے اضطرار میں ہوں

-

kiya kahoon kasie iztarar mian hoon


(250) ووٹ وصول ہوئے