بند کریں
شاعری شکیل بدیوانی

بے خوف و بے ستم

-

Bey Khauf o be sitam


(190) ووٹ وصول ہوئے