بند کریں
شاعری شکیل بدیوانینقاب دیدہ پرنور ہو گئے ہو تم

(240) ووٹ وصول ہوئے