بند کریں
شاعری شکیل جاذب

کوئی پیغام ترا اب کے زبانی بھی نہیں

-

koi peghaam tera abb k zubani bhi nahi


(272) ووٹ وصول ہوئے