بند کریں
شاعری شمیم حنفیسورج دھیرے دھیرے پگھلا پھر تاروں میں ڈھلنے لگا

(330) ووٹ وصول ہوئے