بند کریں
شاعری شرافت عباس

حصارِ شب میں فسوں کار بننا پڑتا ہے

-

hisaar shab main fasoon kar banna parta hai

شرافت عباس

sharafat abbas

(193) ووٹ وصول ہوئے