بند کریں
شاعری شرافت عباس

کوئی روش کوئی معیار ہی بناتا جاوٴں

-

koi ravish koi mayar hi banata jaoon


(251) ووٹ وصول ہوئے