بند کریں
شاعری شیراز ساگر

ہر گلی کا سراغ رکھتے ہیں

-

har gali ka surag rakhte hain


(401) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان