بند کریں
شاعری شیراز ساگر

مجھے ہوئی نہ ذرا بھی تھکان صحرا میں

-

mujhe hui na zara bhi thakan sehra main


(416) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان