بند کریں
شاعری صوفی تبسمکتنی جدائیوں کے کھائے ہیں زخم دل پر

(255) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان