بند کریں
شاعری سعید عارفکون سا گھر تھا کہ جس گھر سے دھواں اٹھتا نہ تھا

(343) ووٹ وصول ہوئے