بند کریں
شاعری سعید عارف

لغزشوں سے ماورا تو بھی نہیں میں بھی نہیں

-

laghzishoon se marwa tu bhi nahi main bhi nahi


(423) ووٹ وصول ہوئے