بند کریں
شاعری اظہر عباسقدم قدم نشان ڈھونڈتا رہا

(301) ووٹ وصول ہوئے