بند کریں
شاعری سید امتیاز احمد

راستے میں کہیں کھویا نہیں تھا

-

raste main kahin khoya nahi tha


(260) ووٹ وصول ہوئے