بند کریں
شاعری تیمور حسن تیمور

ایک منزل ہے ایک جادہ ہے

-

aik manzil hai ik jadu hai


(260) ووٹ وصول ہوئے