بند کریں
شاعری طارق ہاشمیچمک رہا ہے جو اک ستارہ نہیں رہے گا

(216) ووٹ وصول ہوئے