بند کریں
شاعری تصدق حسین تصدق

ساون بھی گزرتے ہیں ، بادل بھی برستے ہیں

-

sawan bhi guzarte hain badal bhi baraste hain


(909) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان