بند کریں
شاعری ولی دکنیقد ترا رشک سرو رعنا ہے

(156) ووٹ وصول ہوئے