بند کریں
شاعری ولی دکنی

روح بخشی ہے کام تجھ لب کا

-

rooh bakhshi hai kaam


(173) ووٹ وصول ہوئے