بند کریں
شاعری ولی دکنی

تخت جس بے

-

Takhth jis be


(140) ووٹ وصول ہوئے