بند کریں
شاعری وزیر آغادل ڈھل چکا تھا اور پرندہ سفر میں تھا

(332) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان